6 غلطیاں جوپڑھے لکھے لوگ کرتے ہیں

آج کے دور میں اسی فیصد لوگ مرد وعورت غسل کے اندر چھ غلطیاں کرتے ہیں دو غلطیاں تو ایسی ہیں اگر کوئی مرد عورت غسل کے اندر یہ دوغلطیاں کرلے گا تو غسل اس کا ادا نہیں ہوگا ہمیشہ وہ ناپاک رہے گا چار غلطیاں ایسی ہیں اگر کوئی مرد عورت وہ چار غلطیاں کرلے تو اس کو گناہ ملتا ہے آج ہم آپ کو چھ غلطیاں بتائیں گے آپ نے غسل کرتے ہوئے یہ غلطیاں نہیں کرنی ہیں اس لیے اس مسئلے کو لازمی سنیں اور اس پر عمل کریں ۔

غسل کے تین فرض ہیں قلی کرنا ناک میں پانی ڈالنا اور سارے جسم پر پانی مارنا کوئی جگہ بال برابر خشک نہ رہے اگر بال برابر بھی جسم کا کوئی حصہ خشک رہے گا تو ہمارا غسل ادا نہیں ہوگا ۔ جو غلطی کرتے ہیں یہ وہ غلطی ہے جس سے ہمارا غسل نہیں ہوگا جب غسل نہیں ہوگا تو پاکی حاصل نہیں ہوگا جو مرد عورت ناخن پالش لگا لیتی ہیں جس کے لگانے سے پانی نہیں پہنچتا کیونکہ یہ بھی جسم کا حصہ جب پانی ناخن تک نہیں پہنچے گا تو آپ کا غسل نہیں ہوگا ۔ یہ بات یاد رکھیں جسم کا کوئی بھی حصہ جہاں پر کوئی چیز لگ جائے ایسی چیز لگی ہے آپ کو پتا اس کے لگنے سے پانی جسم تک سرائیت نہیں کرے گا اس کے ذریعے پانی نہیں پہنچے گا تو غسل نہیں ہوگا ۔ بعض دفعہ کچھ پینٹ یا ایلفی طرح کی کوئی چیز جسم پر لگ جائے تو غسل نہیں ہوگا کیونکہ بال برابر جگہ خشک رہ گئی ہے۔آپ کو غسل ایسی جگہ کرنا چاہیے

جہاں پر باپردہ انتظام ہو بعض دفعہ گرمیوں کے اندر ایسا ہوتا ہے کہ مرد حضرات تھوڑے کپڑے پہن کر غسل کرنے لگ جاتے ہیں اسلام ہمیں حیاء کا درس دیتا ہے اگر آپ کا ستر نظر آرہا ہے اس صورت کے اندر وہ گنہگار ہوتا ہے ایسی جگہ غسل کرنا ہے جہاں آپ کا ستر چھپا ہو۔اکثر آپ غسل کے دوران کپڑے پکڑاؤ یعنی کے غسل خانے کے اندر باتیں کررہے ہیں تو یہ بھی گناہ ہے نہاتے ہوئے بات نہیں کرنی چاہیے ۔ ایسی جگہ غسل کرنا چاہیے جو جگہ پاک ہو تاکہ آپ کے ذہن کے اندر کسی کا شک نہ رہے کہ آپ نہارہے ہیں اور ناپاکی آپ کے جسم میں لگی ہوئی پاک جگہ پر غسل کا انتخاب کرنا ہے ۔اکثر لوگ انگوٹھی پہن لیتے ہیں کان میں بالی لگا لیتے ہیں اور کانوں کے اندر کانٹے وغیرہ پہنتے ہیں اس صورت میں غسل کررہے ہیں تو اس صورت میں کانوں کے سوراخوں تک اور انگوٹھی کے نیچے پانی پہنچانا ضروری ہے ۔ اگر آپ یہ نہیں کریں گے تو آپ کا غسل نہیں ہوگا